زرمبادلہ کے ذخائر 4 سال کی بلند ترین سطح پر

sample-ad

اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے مطابق ملک کے زرمبادلہ کے ذخائر 4 سال کی بلند ترین سطح پر آگئے

مرکزی بینک کی جانب سے جاری اعداد و شمار کے مطابق 2 اپریل سے 9 اپریل کے دوران ملکی زرمبادلہ کے ذخائر میں 2.54 ارب ڈالر کا اضافہ ہوا، ذخائر میں اضافہ 2.5 ارب ڈالر کے یورو بانڈذ کی نیلامی کے بعد ہوا

مرکزی بینک کے مطابق اس وقت ملک مجموعی زرمبادلہ کے ذخائر 23 ارب 22 کروڑ ڈالر ہیں

جن میں سے اسٹیٹ بینک کے پاس 16 ارب 10 کروڑ ڈالر جبکہ کمرشل بینکوں کے پاس 7 ارب 11 کروڑ ڈالر ہیں

مرکزی بینک کا کہنا ہے کہ 2 سے 9 اپریل کے دوران اسٹیٹ بینک کے ذخائر 2.57 ارب ڈالر اضافہ ہوا

جب کہ کمرشل بینکوں کے ذخائر 3.83 کروڑ ڈالر کی کمی ہوئی

سرکاری ذخائر جولائی 2017 کے بعد بلند ترین سطح پر آگئے

واضح رہے کہ اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی جانب سے 25 مارچ کو 19مارچ تک کے ذخائر کی رپورٹ جاری کی گئی تھی

ترجمان کی جانب سے جاری اعلامیے میں بتایا گیا تھا کہ 19 مارچ تک مرکزی بینک کے ذخائر میں 27 کروڑ ڈالرز کا اضافہ ہوا

جس کے بعد مرکزی بینک کے ذخائر بڑھ کر 13.01 ارب ڈالرز سے بڑھ کر 13 ارب 29 کروڑ ڈالرز تک پہنچ گئے تھے

sample-ad

Facebook Comments

POST A COMMENT.