سنٹرل کاٹن ریسرچ انسٹیٹیوٹ ملتان میں ملازمین کا احتجاج

sample-ad

ملتان (عادل چودھری ) سنٹرل کاٹن ریسرچ انسٹیٹیوٹ ملتان میں ملازمین نے 5 ماہ سے تنخواہیں نہ ملنے پر ایک بڑا احتجاج ریکارڈ کرایا ہے

جس میں سینکڑوں کی تعداد میں ملازمین نے شرکت کی

ملازمین نے روزانہ کی بنیاد پر 1 گھنٹہ احتجاج کا پروگرام تشکیل دیا ہے

تفصیلات کے مطابق وزارت نیشنل فوڈ سیکیورٹی کے ماتحت ادارہ پاکستان سنٹرل کاٹن کمیٹی کے 700 سے زائد ملازمین وپینیشنرز گزشتہ 5 ماہ سے تنخواہوں اور پینشنز سے محروم ہیں

ان سب نے اعلیٰ حکام کو بے شمار درخواستیں دیں اور پی سی سی سی کے مسائل کو حل کرنے کے لئے اقداما ت اٹھانے کو کہا مگر ان کی ابھی تک شنوائی نہیں ہوئی

پی سی سی سی کے اب تک دو ملازمین کی تنخواہیں نہ ملنے کے سبب اموات ہو چکی ہیں

ادارے کے ملازمین سخت ذہنی دباﺅ کا شکار ہیں جس کی وجہ سے کپاس کا تحقیقی کام بری طرح متاثر ہو رہا ہے

ملازمین نے آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسو سی ایشنز ایپٹما کے رہنماﺅں کے خلاف نعرے بازی کی اور انہوں نے وزیر اعظم عمران خان ،چیف جسٹس اور چیف آف آرمی اسٹاف سے اپیل کی کہ وہ ایپٹما کے ذمہ پی سی سی سی کے واجب الادا اڑھائی ارب روپے نکلوائیں جو کئی سالوں سے تاخیر کا شکار ہیں

ایپٹما کے کرتا دھرتا پی سی سی سی کے پیسے دبا کر بیٹھے ہیں

پاکستان سنٹرل کاٹن کمیٹی کے ملازمین کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے اعلان کے باوجود پی سی سی سی کو اینڈوڈنمنٹ فنڈ کی مد میں 2 ارب روپے کی رقم جاری نہ ہو سکی

جس کی وجہ سے سینکڑوں حاضر سروس اور ریٹائرڈ ملازمین تنخواہوں و پینشن سے محروم ہو رہے ہیں – متعدد ملازمین کے گھروں میں فاقوں کی نوبت آ چکی ہے – تفصیلات کے مطابق کپاس کی فصل پر تحقیق کے حوالے3 کا مالی بحران بدستور جاری ہے اور اب رہی سہی کسر وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے اعلان کردہ اینڈونمنٹ فنڈز کی مد میں 2 ارب روپے کی رقم جاری نہ ہونے سے پوری ہو گئی ہے – واضح رہے کہ اس ادارے میں گزشتہ 8 سال سے مستقل سربراہ تعینات نہیں کیا گیا ادارے کو محض اضافی چارج دے کر معاملات چلائے جا رہے ہیں – ایپٹما کے ذمہ کاٹن سیس کی ادائیگی روک دینے سے اور وزیر اعظم کے اعلان کردہ ایندونمنٹ فنڈز کا فنانس ڈویثزن کی طرف سے جاری نہ ہونے سے پاکستان کا سب سے بڑا کپاس کا قومی اہمیت کا ادارہ مزید زبوں حالی سے دوچار ہیں – واضح رہے کہ ادارے کی مخدوش مالی حالت کے پیش نظر وزیر اعظم عمران خان نے فروری میں تین سالوں کے لئے 6 ارب روپے فراہم کرنے کا اعلان کیا تھا ، تاہم 11 ماہ گزرنے کے باوجود رواں سال کے 2 ارب روپے کے خطیر فنڈ جاری نہیں ہو سکے – فنڈز نہ ملنے سے 700 سے زائد حاضر سروس و ریٹائرڈ ملازمین فاقہ کشی پر مجبور ہیں

سنٹرل کاٹن ریسرچ انسٹیٹیوٹ ملتان کے ملازمین تنخواہیں نہ ملنے پر احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے

sample-ad

Facebook Comments

POST A COMMENT.