شہروز کاشف کوہ کم عمر ترین ماؤنٹ ایورسٹ سر کرنے کا اعزاز مل گیا

sample-ad

پاکستانی کوہ پیما شہروز کاشف نے ماونٹ ایورسٹ کو سر کر کے دنیا کی بلند ترین چوٹی ماؤنٹ ایورسٹ پر سبز ہلالی پرچم بلند کر دیا

19 سالہ نوجوان شہروزکاشف نے 8849 میٹربلند چوٹی سرکرلی

جس کے بعد شہروز کاشف بلند ترین چوٹی سر کرنے والے کم عمرترین پاکستانی بن گئے ہیں البتہ شہروز کاشف ماؤنٹ ایورسٹ سر کرنے والے پانچویں پاکستانی بن گئے ہیں

شہروز نے آج صبح 5 بج کر 5 منٹ پر ماؤنٹ ایورسٹ سر کیا ہے

8 ہزار 849 میٹر بلند ماؤنٹ ایورسٹ دنیا کی سب سے بلند چوٹی ہے

شہروز پاکستان سے اپنی مدد آپ کے تحت اکیلے نیپال گئے تھے

شہروزکاشف کی 8 ہزارمیٹرسے بلند چوٹی کی دوسری کامیابی ہے

قبل ازیں شہروزکاشف 17 سال کی عمرمیں براڈ پیک پرقومی پرچم لہرا چکے ہیں

واضح رہے کہ دنیا میں 8 ہزارمیٹرسے زیادہ بلند 14 پہاڑی چوٹیاں موجود ہیں

8 ہزارمیٹرسے اونچی 8 چوٹیاں سرکرنے کا اعزاز پاکستان کے محمدعلی سدپارہ کا ہے

گن پوائنٹ پر خاتون کے ساتھ زیادتی کے بعد قیمتی اشیاء چھینے والے باپ بیٹا گرفتار

پاکستان میں کسی طور ٹیلنٹ کی کمی نہیں ہے

پاکستان کے ہر شعبے میں کوئی نہ کوئی ایسا ہونہار شخص ضرور موجود ہے جو اپنے ہنر اور ٹیلنٹ کی وجہ سے دنیا بھر میں پاکستان کا نام روشن کرنے میں اپنا اہم کردار ادا کرتا ہے

گذشتہ ماہ بھی پاکستان کے دو کوہ پیماؤں نے نے دنیا کی 10 ویں بلند ترین چوٹی اناپورنا سر کر کے تاریخ رقم کر دی اور دنیا بھر میں پاکستان کا نام روشن کیا تھا

نیپال میں واقع دنیا کی دسویں بڑی چوٹی انا پورنا کی اونچائی 8 ہزار 91 میٹر ہے، جسے پہلی مرتبہ پاکستانی کوہ پیماؤں نے سر کیا

چوٹی سر کرنے والے دونوں پاکستانی کوہ پیماؤں سر باز خان اور عبدالجوشی کا تعلق ہنزہ سے تھا

قبل ازیں لاڑکانہ سے تعلق رکھنے والے کوہ پیما اسد علی میمن نے براعظم افریقہ کی بلند ترین چوٹی ماؤنٹ کیل کو دنوں کے بجائے گھنٹوں میں سر کی تھی

کوہ پیما اسد علی میمن نے براعظم افریقہ کی بلند ترین ماؤنٹ کیلی منجیرو صرف چودہ گھنٹے میں سر کی تھی

sample-ad

Facebook Comments

POST A COMMENT.