ورثاء نے لاپتہ فضل مولا کی لاش کی شناخت کر لی

sample-ad

مہمند(افضل صافی)پولیس نے عدالتی حکم پر ویران کنویں سے لاش برآمد کر لی

شمیم بی بی سکنہ زیارت کور کی مدعیت اور نشاندہی پر صافی قلعہ گئی میں ویران کنویں سے لاش نکال کرپوسٹ مارٹم کیلئے غلنئی ہسپتال منتقل کردیا

ذرائع کے مطابق لاش کی درست شناختی تفتیش عمل کے بعد ظاہر ہونگے

مختلف ذرائع کے مطابق شمیم بی بی نے رپورٹ درج کرتی ہوئی بتائی کہ انکی شوہر فضل مولا ولد رحمان اللہ سکنہ زیارت صافی کئی سال قبل لاپتہ ہوگیا ہے

مذکورہ شمیم بی بی نے رپورٹ میں اپنے شوہر کی قتل کی دعویداری صافی امن کمیٹی کے سربراہ ملک صوبیدار وغیرہ پر بات کرتے ہوئے بتایا کہ مقتول کی لاش کو قاتلوں نے تحصیل صافی قلعہ گئی میں ویراں کنویں میں پھینکنے کی نشاندہی کردی ہے

جبکہ پولیس تفتیشی ٹیم نے ریسکیو ٹیم کے تعاون پر چالیس منٹ کی مسلسل آپریشن کے دوران ویران کنویں سے انسانی اعضاء کا بوسیدہ ڈھانچہ اور چپل برآمد کر کے غلنئی ہسپتال منتقل کردیا

مگر پولیس ذرائع نے قبل از تفتیش شناخت سے معذرت ظاہر کردی اور بتایا کہ لاش کی صحیح شناخت تفتیشی عمل پورا ہونے کے بعد ظاہر ہوگی جبکہ دوسری طرف لاپتہ فضل مولا کے ورثاء غلنئی ہسپتال میں بڑی بے صبری سے انتظار کر رہے ہیں

کنویں سے 8 سال بعد ایک شخص کی لاش نکالی گئی

شمیم بی بی نے اخباری نمائندوں کو ایک انٹرویو دیتے ہوئے بتایا کہ شوہرکو لاپتہ ہوئے تقریباً نو سال گزر گئے

میں تلاش گمشدگی کیلئے بہت سے کٹھن مراحل سے گزرگئی مگراب معلوم ہوا کہ میرے شوہر فضل مولا ملک صوبیدار وغیرہ نے قتل کرکے کنویں میں پھینک دیا ہے اور لاش کے ساتھ برآمد چپل میرے شوہر کی ہے،جسے میں پورے یقین کے ساتھ پہچان سکتی ہوں

انہوں نے تابوت پر اپنے شوہر کی تصویر چسپاں دی

مانیٹری پالیسی سروے کی اسٹیٹ بینک کو پالیسی ریٹ میں کمی کی تجویز : FPCCI

جن کی نماز جنازہ آج 10بجے صافی سید خان کور میں ادا کی گی

انہوں نے حکومت سے فوری انصاف فراہمی کی اپیل کی ہے، یادرہے کہ پولیس میڈیا کوواقعہ کے معلومات دینے میں تعاون نہیں کر رہی ہے

sample-ad

Facebook Comments

POST A COMMENT.