اعلیٰ آفیسرز پر لگائے گئے الزامات سے میرا کوئی تعلق نہیں ہے

sample-ad

مہمند (افضل صافی) ملک نثار خان حلیمزئی نےکہا کہ میرے نام سے اعلی آفیسرز پر لگائے گئے الزامات سے میرا کوئی تعلق نہیں ہے

مجھے اور میرے خاندان کو بدنام کرنے کی ناکام کوشش کی گئی ہے انشاللہ جعل ساز کو جلد بے نقاب کیا جائے گا

حلیمزئی سے تعلق رکھنے والے ملک نثار حلیمزئی نے ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب میں کہا کہ چند لوگ میری خاندانی ساکھ بدنام کرنے اور مجھے ذاتی نقصان پہنچانے کی ناکام کوشش اور سازشیں کرنے میں مصروف ہیں

انہوں نے کہا کہ چند دن پہلے کسی نے میرے نام سے آئی جی اور ڈی آئی جی پولیس کے پی کے کو درخواست بھیجی ہے

جس میں محکمہ پولیس اور محکمہ تعلیم کے اہلکاروں پر سنگین الزامات لگائے گئے تھےاور اسکے علاوہ اس درخواست میں مقامی ایم پی اے کو بھی نشانہ بنایا گیا ہے اور بے بنیاد الزامات لگا کر انکی ساکھ کو نقصان پہنچانے کی کوشش کی گئی ہے

ملک نثار نے کہا کہ عوام کیلئے میری خدمات روز روشن کی طرح عیاں ہیں

میرے خاندان اور مجھے بدنام کرنے کیلئے بہت بھونڈا طریقہ استعمال کیا گیا ہے

جسکی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے

انہوں نے کہا کہ اس مسئلے کی مکمل چھان بین کرنے کیلئے میں کسی بھی قسم کی کاروائی کرنے سے دریغ نہیں کروں گا

انہوں نے انہوں نے کہا کہ میری ذاتی اطلاعات کے مطابق اس سازش میں جو لوگ ملوث ہیں وہ بدکردار اور غلط کاموں میں ملوث ہیں

ان کے خلاف پہلے سے ہی انکوائری چل رہی ہےاور میں انکی کرپشن اور غلط کاموں کو بے نقاب کرتا ہوں اس لیے انہوں میرے خلاف یہ سازش تیار کی ہے

میں بہت جلد انکے خلاف کروڑوں روپے کی کرپشن کے ثبوت سامنے لاکر انکے جعلی حربوں کو ناکام بنادوں گا

ملک نثار نے آئی جی اور ڈی آئی جی اور سیکٹری ایجوکیشن پختونخواہ سے پر زور مطالبہ کیا کہ میرے خلاف سازش کی سائنسی بنیادوں پر تحقیقات کرکے اس مکروہ کام میں ملوث افراد کو سخت سزا دی جائے

تاکہ دوسروں کیلئے نشان عبرت بنیں اور اس کے بعد کوئی بھی نامعلوم شخص کسی کے خلاف بے جا الزامات لگانے کی ہمت نہ کریں

sample-ad

Facebook Comments

POST A COMMENT.